دِن ڈھل گیا شام آگئی عباس عباس نہ لوٹے
شام اور غضب ڈھاگئی عباس عباس نہ لوٹے

باقی نہیںانصار نہ ہے مونس و یاور
مقتولِ جفا رن میں ہوئے سرورِعالم
کرتے ہیں حرم شدّتِ آلام پہ ماتم
سب خردو کلام آہو بکا کرتے ہیں پیہم
یہ کس کی نظر کھا گئی ،عباس عباس نہ لوٹے
دن ڈھل گیا شام آگئی ۔۔۔۔

وہ کون سے ہیں ظلم جو بے دینوںنے چھوڑے
اطفالِ حسینی پہ ستم ہائے یہ توڑے
غش میں پڑے بیمار کو مارے گئے کوڑے
تارا ج کیا خیموں کو دوڑادیئے گھوڑے
سادات پہ آنچ آگئی ،عباس عباس نہ لوٹے
دن ڈھل گیا شام آگئی ۔۔۔۔

گھر لُوٹ لیا چھینی ردا خیمے جلائے
زر لُوٹ کے سیدانیوں کے دُرّ ِ لگائے
ہے کون جو اعدا کی جفائوں سے بچائے
زینب کسے امداد کو اب اپنی بُلائے
غربت کی فضا چھاگئی ،عباس عباس نہ لوٹے
دن ڈھل گیا شام آگئی ۔۔۔۔

در آئے خیامِ پسرِ شہہ میں ستم گر
زخمی کیا دُرّوں سے تنِ عابدِ مضطر
کھینچا ستم افگاروں نے بیمار کا بستر
دیکھا گیا افلاک وزمیں سے نہ یہ منظر
کربوبلاتھرّاگئی ،عباس عباس نہ لوٹے
دن ڈھل گیا شام آگئی ۔۔۔۔

جب زینبِ کبریٰ نے خبر غم کی یہ پائی
مقتل میں کہیں کھو گئی شبیر کی جائی
اُسوقت سخن لب پہ یہ بنتِ علی لائی
اے دشتِ جفا کیسی جفا اور یہ ڈھائی
ماں غم زدا گھبرا گئی ،عباس عباس نہ لوٹے
دن ڈھل گیا شام آگئی ۔۔۔۔

آغوش تمہاری ہے نہ ہے باپ کا سینہ
ضد کرتی ہے جاں کھوتی ہے رورو کے حزینہ
ایسا تو کبھی دیکھا نہ تھا بھائی قرینہ
کیوں آئی نہ دریا پہ تمہیں یاد سکینہ
کیا چیز وہاں بھاگئی ،عباس عباس نہ لوٹے
دن ڈھل گیا شام آگئی ۔۔۔۔

رات آگئی دامن میں لیئے اپنے قیامت
آرام سے سب سو گئے سرشارِ شہادت
پھر ظلم و ستم ڈھانے لگے اہلِ شقاوت
بے وارثوں کی سر کھلے کرنے کو حفاظت
بلوے میں بہن آگئی ،عباس عباس نہ لوٹے
دن ڈھل گیا شام آگئی ۔۔۔۔

کس طرح لکھوں اور کروں کیسے یہ ادا میں
کیا کیا نہ جفائیں ہوئیں زندانِ جفا میں
رہتے تھے حرم یوں تو شب وروز بُکا میں
اک روز سکینہ کو انیس ہجرِچچا میں
زندان میں نیند آگئی ،عباس عباس نہ لوٹے
دن ڈھل گیا شام آگئی ۔۔۔۔


din dhalgaya shaam aagayi abbas abbas na lautay
shaam aur ghazab dha gayi abbas abbas na lautay

baakhi nahi ansarein na hai moniso yawar
maqtool-e-jafa ran may hue sarware aalam
karte hai haram shiddate aalaam pe matam
sab khurdo kalam aaho buka karte hai paygham
ye kiski nazar kha gayi, abbas abbas na lautay
din dhalgaya shaam aagayi....

wo kaunse hai zulm jo bedeeno ne choray
atfaale hussaini pe sitam haaye ye today
ghash may pade bemaar ko maare gaye koday
taraaj kiya qaimo ko dauda diye ghoday
sadaat pe aanch aagayi,  abbas abbas na lautay
din dhalgaya shaam aagayi....

ghar loot liya cheeni rida qaime jalaye
zar loot ke saydaniyo ko durray lagaye
hai kaun jo aada ki jafaon se bachaye
zainab kisay imdaad ko ab apni bulaaye
ghurbat ki fazaa chagayi,  abbas abbas na lautay
din dhalgaya shaam aagayi....

dar aaye qayame pisar-e-sheh may sitamgar
zakhmi kiya durro se tane abid-e-mustar
khaincha sitam abgaaro ne bemaar ka bistar
dekha gaya ab na to zameen se na ye manzar
karbobal thar-ra gayi,  abbas abbas na lautay
din dhalgaya shaam aagayi....

jab zainab-e-kubra ne khabar gham ki ye paayi
maqtal may kahin kho gayi shabbir ki jaayi
us waqt suqan lab pe ye binte ali laayi
ay dashte jafa kaisi jafa aur ye dhaayi
maa ghamzada ghabragayi, abbas abbas na lautay
din dhalgaya shaam aagayi....

aaghosh tumhari hai na hai baap ka seena
zid karti hai jaan khoti hai ro ro ke hazeena
aisa to kabhi dekha na tha bhaai ghareena
kyon aayi na darya pe tumhein yaad sakina
kya cheez wahan bha gayi, abbas abbas na lautay
din dhalgaya shaam aagayi....

raat aagayi daaman may liye apne qayamat
aaraam se sab sogaye sar share shahadat
phir zulm-o-sitam dhane lage ehlay shaqawat
bewariso ke sar kule karne ko hifazath
balwe may bahan aagayi,  abbas abbas na lautay
din dhalgaya shaam aagayi....

kis tarha likhoon aur karoon kaise ye ada mai
kya kya na jafa hui zindaan-e-jafa may
rehte thay haram yun to shab-o-roz buka may
ek roz sakina ko anees hijr jacha may
zindan may neendh aagayi, abbas abbas na lautay
din dhalgaya shaam aagayi....
Noha - Din Dhal Gaya
Shayar: Anees
Nohaqan: Nadeem Sarwar
Download Mp3
Listen Online