دیکھا جو زیرِ تیغ گلا اپنے بھائی کا
دل پاش پاش ہو گیا زہرا کی جائی کا

کہتی تھی رو کے زینبِ خستہ جگر فگار
مشکل کشائ یہ وقت ہے مشکل کشائی کا
دل پاش پاش ہو گیا زہرا کی جائی کا
دیکھا جو زیرِ تیغ ۔۔۔۔۔

کر کے مخاطب اکبرِمحرو کو بولے شہہ
بیٹا خیال رکھنا ذرا چھوٹے بھائی کا
دل پاش پاش ہو گیا زہرا کی جائی کا
دیکھا جو زیرِ تیغ ۔۔۔۔۔

ٹکڑے جو دیکھے حضرتِ قاسم کی لاش کے
سرور کو یاد آیا جگر اپنے بھائی کا
دل پاش پاش ہو گیا زہرا کی جائی کا
دیکھا جو زیرِ تیغ ۔۔۔۔۔

بانو یہ کہہ کے قبرِ سکینہ پہ گر گئی
اُٹھو سکینہ حکم ملا ہے رہائی کا
دل پاش پاش ہو گیا زہرا کی جائی کا
دیکھا جو زیرِ تیغ ۔۔۔۔۔

جس طرح سے لُٹا ہے بھرا گھر حسین کا
دیکھا نہ پھر فلک نے وہ منظر تباہی کا
دل پاش پاش ہو گیا زہرا کی جائی کا
دیکھا جو زیرِ تیغ ۔۔۔۔۔

ہے دوش پر حسین کے کڑیل جواں کی لاش
دل تھر تھرا رہا ہے خدا کی خدائی کا
دل پاش پاش ہو گیا زہرا کی جائی کا
دیکھا جو زیرِ تیغ ۔۔۔۔۔

بڑھ کرگلے سے اپنے اجل کو لگا لیا
دیکھے تو حوصلہ کوئی ننھے سپاہی کا
دل پاش پاش ہو گیا زہرا کی جائی کا
دیکھا جو زیرِ تیغ ۔۔۔۔۔

لوگوں نے آج ذکرِ شاہِ مشرقین کو
کاوش بنا لیا ہے وسیلہ کمائی کا
دل پاش پاش ہو گیا زہرا کی جائی کا
دیکھا جو زیرِ تیغ ۔۔۔۔۔


dekha jo zer e taygh gala apne bhai ka
dil paash paash hogaya zehra ki jaayi ka

kehti thi roke zainab e khasta jigar figaar
mushkil kusha ye waqt hai mushkil kushai ka
dil paash paash hogaya zehra ki jaayi ka
dekha jo zer e taygh....

karke muqatib akbar e mehroo ko bolay sheh
beta khayal rakhna zara chotay bhai ka
dil paash paash hogaya zehra ki jaayi ka
dekha jo zer e taygh....

tukde jo dekhe hazrate qasim ki laash ke
sarwar ko yaad aaya jigar apne bhai ka
dil paash paash hogaya zehra ki jaayi ka
dekha jo zer e taygh....

bano ye kehke qabr e sakina pe gir gayi
utho sakina hukm mila hai rehaai ka
dil paash paash hogaya zehra ki jaayi ka
dekha jo zer e taygh....

jis tarha se luta hai bhara ghar hussain ka
dekha na phir falak ne wo manzar tabahi ka
dil paash paash hogaya zehra ki jaayi ka
dekha jo zer e taygh....

hai dosh par hussain ke kadiyal jawan ki laash
dil tharthara raha hai khuda ki khudayi ka
dil paash paash hogaya zehra ki jaayi ka
dekha jo zer e taygh....

badkar galay se apne ajal ko laga liya
dekhe to hausla koi nanhe sipaahi ka
dil paash paash hogaya zehra ki jaayi ka
dekha jo zer e taygh....

logon ne aaj zikre shahe mashraqain ko
kaawish bana liya hai waseela kamayi ka
dil paash paash hogaya zehra ki jaayi ka
dekha jo zer e taygh....
Noha - Dekha Jo Zer e Taygh
Shayar: Kaawish
Nohaqan: Sajid Hussain Jafri
Download Mp3
Listen Online