عباس علمدار

کیا ہوا کیوں اُداس بیٹھا ہے
تُو عزادارِ ابنِ زہرا ہے
چل وہاں رب جہاں پہ ملتا ہے
چل جہاں پنجتن کا سایا ہے
وہ سخی در کھلا ہی رہتا ہے

چھوٹے حضرت کی بارگاہ چلو
چلو عباس کی درگاہ چلو

انکی درگاہ سے سوغاتِ وفا ملتی ہے
نامِ زینب پہ یہاں سب کو ردا ملتی ہے
زائروں آئوسکینہ کی دُعا ملتی ہے
میرے سقّے کے عزادار جیو
چلو عباس کی ۔۔۔
چھوٹے حضرت کی۔۔۔

ہاں یہی بابِ حوائج دُعائے زہرا
یہ علی کا سراپا تو حسن کا چہرہ
ان کوکہتے ہیں حسین ابن علی کاپیارا
پنجتن پاک کے پیارے سے کہو
چلو عباس کی ۔۔۔
چھوٹے حضرت کی۔۔۔

حاضری اِنکی جب ہوتی ہے دیے جلتے ہیں
مصطفی فاطمہ حثنین و علی آتے ہیں
مل کے سب مادرِعباس سے فرماتے ہیں
آئو عباس کی تم نظر تو دو
ِچلو عباس کی ۔۔۔
چھوٹے حضرت کی۔۔۔

اِن کا جب آٹھ محرم کو علم اُٹھتا ہے
ایک مشکیزہ بھی پنجے سے بندھا رہتا ہے
اُس پہ سقّائے سکینہ بھی لکھا رہتا ہے
یہ علم کیا ہے سکینہ سے سنو
چلو عباس کی ۔۔۔
چھوٹے حضرت کی۔۔۔

جس نے نو لاکھ کے لشکر کا بھرم توڑدیا
اُس پہ اک مشک کے چھدنے نے ستم توڑدیا
یا سکینہ کہا اور خاک پہ دم توڑدیا
مل کے سب ماتمِ عباس کرو
چلو عباس کی ۔۔۔
چھوٹے حضرت کی۔۔۔

ضامنِ چادرِزینب تھے علمدارِ وفا
جس گھڑی ثانیئ زہرا سے یہ فضّہ نے کہا
چادریںاپنی سنبھالو کہ وہ غازی نہ رہا
پرسہ اب زینب و کلثوم کو دو
چلو عباس کی ۔۔۔
چھوٹے حضرت کی۔۔۔

چھوٹے حضرت کی غلامی کا شرف پایا ہے
ربّ ِکعبہ کی قسم یہ بڑا سرمایا ہے
نوحہ جو سروروریحان سے پڑ ھ وایا ہے
شکرِ مولا چلو غازی سے کہو
چلو عباس کی ۔۔۔
چھوٹے حضرت کی۔۔۔

چھوٹے حضرت حسین کے بھائی
چھوٹے حضرت با حقِ سقّائی
تم وسیلہ ہو غم کے ماروں کا
تم وسیلہ ہو بے سہاروں کا
بارگاہِ خدا میں اے غازی
آپ کی بات رد نہیں ہوتی
دل کی اُلجھن نکال دو مولا
میری مشکل کو ٹال دو مولا
یہ گناہ گار بھی تمہارا ہے
اس لیئے آپ کو پکارا ہے
درد کی اب کوئی دوا بھیجو
اب مجھے کربلا بُلا بھیجو
واسطہ سیدِ مدینہ کا
واسطہ زینب و سکینہ کا
بی بی اُم البنین کا صدقہ
واسطہ پنجتن کا دیتا ہوں
واسطہ بے کفن کا دیتا ہوں
چھوٹے حضرت حسین کے بھائی


abbas alamdar

kya hua kyon udaas baitha hai
tu azadare ibne zehra hai
chal wahan rab jahan pe milta hai
chal jahan panjetan ka saaya hai
wo saqi dar khula hi rehta hai

chote hazrat ki bargah chalo
chalo abbas ki dargah chalo

inki dargah se saughate wafa milti hai
naam e zainab pe yahan sabko rida milti hai
zayaron aao sakina ki dua milti hai
mere saqqe ke azadaar jiyo
chalo abbas ki....
chote hazrat ki....

haan yehi babe hawayej dua e zehra
ye ali ka sarapa to hassan ka chehra
inko kehte hai hussain ibne ali ka pyara
panjatan paak ke pyare se kaho
chalo abbas ki....
chote hazrat ki....

hazari inki jab hoti hai diye jalte hai
mustafa fatema hasnain o  ali aate hai
milke sab maadare abbas se farmate hai
aao abbas ki tum nazr to do
chalo abbas ki....
chote hazrat ki....

inka jab aat moharam ko alam uth-ta hai
ek mashkeeza bhi panje se bandha rehta hai
uspe saqqaye sakina bhi likha rehta hai
ye alam kya hai sakina se suno
chalo abbas ki....
chote hazrat ki....

jisne nau laak ke lashkar ka bharam todh diya
uspe ek mashk ke chidne ne sitam todh diya
ya sakina kaha aur khaak pe dam todh diya
milke sab matame abbas karo
chalo abbas ki....
chote hazrat ki....

zaamine chadare zainab thay almadare wafa
jis ghadi saniye zehra se fizza ne kaha
chadare apni sambhalo ke wo ghazi na raha
pursa ab zainab o kulsoom ko do
chalo abbas ki....
chote hazrat ki....

chote hazrat ki ghulami ka sharaf paaya hai
rabbe kaab ki qasam ye bada sarmaya hai
nauha jo sarwar o rehan se padhwaya hai
shukre maula chalo ghazi se kaho
chalo abbas ki....
chote hazrat ki....

chote hazrat hussain ke bhai
chote hazrat ba haqqe saqqayi
tum waseela ho gham ke maaro ka
tum waseela ho be-saharon ka
baargahe khuda may ay ghazi
aapki baat radh nahi hoti
dil ki uljhan nikaal do maula
meri mushkil ko taal do maula
ye gunahgaar bhi tumhara hai
is liye aap ko pukara hai
dard ki ab koi dawa bhejo
ab mujhe karbala bula bhejo
waasta sayyede madina ka
waasta zainab o  sakina ka
bibi ummul baneen ka sadqa
waasta panjetan ka deta hoo
waasta be-kafan ka deta hoo
chote hazrat hussain ke bhai
Noha - Chote Hazrat Ki Bargah
Shayar: Rehaan Azmi
Nohaqan: Nadeem Sarwar
Download Mp3
Listen Online