چالیس برس روتے نہ کیوں عابدِ مضطر
تا عمر سمایا رہا آنکھوں میں وہ منظر

دیکھا تھا انہیں آنکھوں نے گھر اپنا اُجڑتا
بے گورو کفن لاشے شہیدوں کے زمیں پر
چالیس برس روتے نہ ۔۔۔۔۔

پھرتا ہی رہا آنکھوں میں بھائی کا وہ لاشہ
برچھی تھی کلیجے میں اَنی سینے کے باہر
چالیس برس روتے نہ ۔۔۔۔۔

گزرے تھے کہاں رنج بہت پوچھا کسی نے
الشام ہی الشام کہا سر کو جھُکا کر
چالیس برس روتے نہ ۔۔۔۔۔

دعوت کوئی دیتا تو یہ فرماتے تھے سجاد
گر مجھ کو بپلانا ہے تو مجلس تُو بپا کر
چالیس برس روتے نہ ۔۔۔۔۔

دیکھے جو عاشور کو بجھتے ہوئے شعلے
تا عمر دھواں اُٹھتا رہاآہوں میں ڈھل کر
چالیس برس روتے نہ ۔۔۔۔۔

کیا گزری دلِ سیدِ سجاد پہ اُس دم
جب لُوٹا گیا بیبیوں کا مکھنہ و چادر
چالیس برس روتے نہ ۔۔۔۔۔

کس مرد میں ہے حوصلہ جُز عابدِ بیمار
ماں بہنوں کو جو دیکھ لے بلوے میں کھُلے سر
چالیس برس روتے نہ ۔۔۔۔۔

ہر اک نفس گریہ تھا یا تا عطائے معبود
اک لمحہ بھی راحت نہ انیس آئی میسر
چالیس برس روتے نہ ۔۔۔۔۔


chalees baras rote na kyun abid e muztar
ta umr thamaya raha aankhon may wo manzar

dekha tha inhi aankhon ne ghar apna ujadta
be goro kafan laashe shaheedo ke zameen par
chalees baras rote na....

phirta hi raha aankhon may bhai ka wo laasha
barchi thi kaleje may ani seene ke baahar
chalees baras rote na....

guzre thay kahan ranj bahot poocha kisi ne
as shaam hi as shaam kaha sar ko jhuka kar
chalees baras rote na....

daawat koi deta to ye farmate thay sajjad
gar mujhko bulaana hai to majlis tu bapa kar
chalees baras rote na....

dekhe thay jo ashoor ko bujhte hue sholo
ta umr dhuan ut-tha raha aahon may dhal kar
chalees baras rote na....

kya guzri dil e sayyede sajjad pe us dam
jab loota gaya bibiyon ka makhna o chadar
chalees baras rote na....

kis mard may hai hausla juz abid e bemaar
maa behno ko jo dekhle balwe may khule sar
chalees baras rote na....

har ek nafas girya tha ya ta atay mabood
ek lamha bhi raahat na anees aayi mayassar
chalees baras rote na....
Noha - Chalees Baras Rote
Shayar: Anees
Nohaqan: Sajid Hussain Jafri
Download Mp3
Listen Online