بے تاب کر رہی ہے زیارت کی آرزو
یا صاحب الزماں

ویران ہے بزم کون و مکاں آپ کے بغیر
ہر اک نفس ہے دل پہ گراں آپ کے بغیر
اک رسم ہے یہ سوت اذاں آپ کے بغیر
مولا مولا آجائیے منتظر ہے عبادت کی آرزو
یا صاحب الزماں

کب تک اس انتظار کی دنیا میں ہم رہیں
کب تک غم فرات کے صحرا میں ہم رہیں
کب تک اسیر قید تمنا میں ہم رہیں
مولا مولا کب پائے گی مراد یہ خدمت کی آرزو
یا صاحب الزماں

وہی در جہجاب یہ غیبت تمام ہو
جلوہ کعبہ میں در پہ پھر اہتمام ہو
لمحہ وہ آئے جس میں ظہور امام ہو
مولا مولا محشر اٹھا رہی ہے قیامت کی آرزو
یا صاحب الزماں

منت کا شر و شرم ہے ابلاغ کربلا
ہائے میان منبر و محراب ہے عیاں
جو حال ہے وہ آپ سے کب ہے چھپا ہوا
مولا مولا کی التجا میں ہے اجلت کی آرزو
یا صاحب الزماں

پابوسئیہ امام زمانہ نصیب ہو
یارب شفاعتوں کا خزانہ نصیب ہو
نصرت میں ان کی جان لٹانا نصیب ہو
مولا مولا حُر کی طرح ہے خوبی قسمت کی آرزو
یا صاحب الزماں

لینا ہے ہم کو خون شہیداں کا انتقام
اک بے زباں کی کشتہ پیکاں کا انتقام
وہ بے کسوں کی شام غریباں کا انتقام
مولا مولا آواز دے رہی ہے شہادت کی آرزو
یا صاحب الزماں

سجائیے حسین کی غربت کا واسطہ
عباس علمدار کی حسرت کا واسطہ
زینب پہ بے ردائی کی آفت کا واسطہ
مولا مولا غلطاں ہے آنسوئوں میں شفاعت کی آرزو
یا صاحب الزماں

آصف وفا کی گود کے پالے ہوئے ہیں ہم
عباس کے علم کو سنبھالے ہوئے ہیں ہم
دنیا کو اپنے دل سے نکالے ہوئے ہیں ہم
مولا مولا شامل ہمارے خوں میں ہے نفرت کی آرزو
یا صاحب الزماں


betaab kar rahi hai ziarat ki aarzo
ya sahibuz-zaman

veeran hai bazme kaun o makaan aap ke baghair
har ek nafas hai dil pe garan aap ke baghair
ek rasm hai ye saut e azan aap ke baghair
maula maula aa jaye muntazir hai ibadat ki aarzo
ya sahibuz-zaman

kab tak is intezar ki duniya may hum rahay
kab tak gham e furat ke sehra may hum rahay
kab tak aseer e qaid e tamanna may hum rahay
maula maula kab payegi murad ye qidmat ki aarzo
ya sahibuz-zaman

waho dare jhijab ye ghaybat tamam ho
jalwo kaba may duur pe phir ehtemam ho
lamha wo aaye jis main zahoor e imam ho
maula maula mehshar utha rahi hai qayamat ki aarzo
ya sahibuz-zaman

minnat ka shero soom hai iblaagh e karbala
haye mayan e mimbar o mehrab hai ayaan
jo haal hai wo aap se kab hai chupa hua
maula maula aamad ki iltija may hai ujlat ki aarzo
ya sahibuz-zaman

pabosiye imam e zamana naseeb ho
ya rab shifa'ato ka khazana naseeb ho
nusrat may unki jaan ka lutana naseeb ho
maula maula hur ki tarha hai khoobiye qismat ki aarzo
ya sahibuz-zaman

lena hai humko khoon e shaheedan ka inteqam
ek bezuban ke kushtaye paykaan ka inteqam
wo bekason ki sham e ghariban ka inteqam
maula maula awaaz de rahi hai shahadat ki aarzo
ya sahibuz-zaman

aa jaiye hussain ki ghurbat ka waasta
abbas e naamdar ki hasrat ka waasta
zainab pe be-ridayi ki aafat ka waasta
maula maula ghalta hai aansuon may shifa'at ki aarzo
ya sahibuz-zaman

asif wafa ki godh ke palay huye hai hum
abbas ke alam ko sambhalay huye hai hum
dunya ko apne dil se nikalay huye hai hum
maula maula shamil hamare khoon may hai nusrat ki aarzo
ya sahibuz-zaman
Noha - Betaab Kar Rahi Hai
Shayar: Asif Abidi
Nohaqan: Riaz Ali
Download mp3
Listen Online