ائے شامِ غریباں
بہتی رہی فُرات

خون ہو کر بہہ گیا اکبر کا دل
مسکرا کر ختم اصغر ہوگئے
بہتی رہی فُرات۔۔۔

کربلا کے دشت میں کیسا اندھیرا چھا گیا
آگئی شامِ غریباں سرخ ہے خاکِ شفائ
جل گئے خیمے سرِ شامِ الم
کتنے منظر خاک ہو کر رہ گئے
بہتی رہی فُرات

ڈھل گیا دن شام آئی شام بھی ایسی کے بس
دوپہر کے بعد چھائی ایسی تنہائی کے بس
کس طرح زہرا کا گھر لُوٹا گیا
ہوگئے۲۷کس طرح بے سر بہتّر
بہتی رہی فُرات۔۔۔

آج صبحِ دم یہ گھر روشن بھی تھا آباد بھی
سب کے وارث تھے سلامت بھائی بھی اولاد بھی
اک ہوا ایسی چلی پردیس میں
بے زباں بچے بھی بے سر ہوگئے
بہتی رہی فُرات۔۔۔

یہ ہے وہ شامِ غریباں جو قیامت بن گئی
دُخترِ زہرا کے سر سے جس نے چادر چھین لی
یارسو ل اللہ قیامت ہوگئی
داخلِ خیمہ ستمگر ہو گئے
بہتی رہی فُرات۔۔۔

ایک اک قطرے کو ترسے بن میں اطفالِ حسین
مشک زخمی خالی کوزے لاش پامالِ حسین
رہ گیا میدان میں بے کس کا تن
جشن مین مصروف لشکر ہوگئے
بہتی رہی فُرات۔۔۔

مرتے دم پانی پسرمانگے پدر مجبور ہے
تُوبتا شامِ غریباں القمہ کیا دُور ہے
وائے نہرِ القمہ بہتی رہی
اور پیاسے قتل اکبر ہوگئے
بہتی رہی فُرات۔۔۔

ہے وہی منظر وہی خیمے وہی تشنہ لبی
آئی ہے شامِ غریباں خوں رُلانے آج بھی
غم ہمیں ریحان وسرسر کیوں نہ ہو
مہوے ماتم جب پیمبر ہوگئے
بہتی رہی فُرات۔۔۔


ay sham e ghariban
behti rehi furaat

khoon ho kar beh gaya akbar ka dil
muskura kar kar khatm asghar hogaye
behti rehi furaat

karbala ke dasht may kaisa andhera cha gaya
aagayi sham e ghariban surkh hai khaak e shifa
jal gaye qaime sare sham e aalam
kitne manzar khaakh ho kar reh gaye
behti rehi furaat....

dhal gaya dil shaam aayi shaam bhi aisi ke baad
do paher ke baad chaayi aisi tanhayi ke baad
kis tarha zehra kaa ghar loota gaya
kis tarha be sar ba-hattar ho gaye
behti rehi furaat....

aaj subhe dum ye ghar roshan bhi tha abaad bhi
sab ke waaris thay salamat bhai bhi aulaad bhi
ek hawa aisi chali pardes may
be zaban bache bhi be-sar ho gaye
behti rehi furaat....

ye hai wo sham-e-ghariban jo qayamat bangayi
dukhtar-e-zehra ke sar se jisne chadare cheenli
ya rasool allah qayamat ho gayi
daakhile qaima sitamgar ho gaye
behti rehi furaat....

ek ek katre ko tarse ban may atfaal-e-hussain
mashk zakhmi khaali kooze laash pamaal-e-hussain
reh gaya maidan may bekas ka tan
jashan may masroof lashkar ho gaye
behti rehi furaat....

marte dam pani pisar maange padar majboor hai
tu bata sham-e-ghariban al-qama kya door hai
waaye nehre al-qama behti rahi
aur pyase qatl akbar hogaye
behti rehi furaat....

hai wohi manzar wohi qaimay wohi tishna labi
aayi hai sham-e-ghariban khoon rulaane aaj bhi
gham hame rehan -o-sarwar kyun na ho
mahve matam jab payambar hogaye
behti rehi furaat....
Noha - Behti Rahi Furaat
Shayar: Rehaan Azmi
Nohaqan: Nadeem Sarwar
Download Mp3
Listen Online