بانو نے کہا اے میرے جانی علی اکبر
برباد ہوئی تیری جوانی علی اکبر
بانو نے کہا ۔۔۔

کب بانوئِ ناشاد کو اس دن کی خبر تھی
لُوٹے گی قضائ تیری جوانی علی اکبر
بانو نے کہا ۔۔۔

پیاسے ہی لڑے پیاسے ہی دنیا سے سدھارے
ماں دے نہ سکی نزع میں پانی علی اکبر
بانو نے کہا ۔۔۔

مرنے کے نہیں یہ تو ابھی بیاہ کے دن تھے
برچھی نہ ابھی تھی تمہیں کھانی علی اکبر
بانو نے کہا ۔۔۔

دل خون ہوا جاتا ہے فُرقت میں تمہاری
رُکتی نہیں اشکوں کی روانی علی اکبر
بانو نے کہا ۔۔۔

تُوں احمدِ مُرسل کی جوانی کا نشاں تھا
اعدائ نے تیری قدر نہ جانی علی اکبر
بانو نے کہا ۔۔۔

جس نے تمہیں مارا وہ مسلماں نہ ہو گا
تھے تم تو محمد کی نشانی علی اکبر
بانو نے کہا ۔۔۔

مشکل تھا ضعیفی میں یہ آسان کہاں تھا
بیٹے کی جواں لاش اُٹھانی علی اکبر
بانو نے کہا ۔۔۔

اے لال اب آنکھوں سے سوجھائی نہیں دیتا
آجائو میرے یوسفِ ثانی علی اکبر
بانو نے کہا ۔۔۔


bano ne kaha ay mere jaani ali akbar
barbaad hui teri jawani ali akbar
bano ne kaha....

kab banu-e-nashaad ko is din ki kahabar thi
lootegi khaza teri jawani ali akbar
bano ne kaha....

pyase hi laday pyase hi dunya se sidhaare
maa de na saki nazah me pani ali akbar
bano ne kaha....

marne ke nahi ye to abhi byah ke din thay
barchi na abhi thi tumhay khaani ali akbar
bano ne kaha....

dil khoon hua jaata hai furqat may tumhari
rukti nahi ashko ki rawani ali akbar
bano ne kaha....

tu ahmade ki mursal ki jawani ka nishan tha
aada ne teri khadr na jaani ali akbar
bano ne kaha....

jisne tumhay maara wo musalman na hoga
thay tum to mohamed ki nishani ali akbar
bano ne kaha....

mushkil tha zaeefi may ye aasan kahan tha
bete ki jawan laash uthani ali akbar
bano ne kaha....

ay laal ab aankhon se sujaayi nahi deta
aajao mere yusufe sani ali akbar
bano ne kaha....
Noha - Bano Ne Kaha

Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online