ویران اُداس گھر میں صغریٰ کی یہ صدا ہے
تنہائیوں میں بابا دم میرا گھُٹ رہا ہے
بابا دم گھُٹتا ہے

روداد اپنے غم کی اشکوں سے لکھ رہی ہوں
تنہا میں بیٹھے بیٹھے ہر دم یہ سوچتی ہوں
لینے نہیں تم آئے کیا تم کو ہو گیا ہے
بابا ۔۔۔۔۔

قاسم کو دیکھ لوں میں اصغر کو دیکھ لوں
چھوٹی بہن سے مل لوں اکبر کو دیکھ لوں
بیمار ہوں میں بابا میری یہی دواہے
بابا ۔۔۔۔۔

خالی پڑے ہیں حُجرے سُونے پڑے ہیں بستر
ڈستا ہے مجھ کو بابا اُجڑا ہوا میرا گھر
کیا آپ کی نظر میں میری یہی سزا ہے
بابا ۔۔۔۔۔

آ جائیں آپ واپس یا پھر مجھے بُلا لیں
فرقت میں آپ کی ہم گھُٹ گھُٹ کے مر نہ جائیں
وہ شدتِ آلم ہے دم لب پہ آ گیاہے
بابا ۔۔۔۔۔

پہلی سی رونقیں وہ سب یاد آ رہی ہیں
بھائی بہن کی یادیں مجھ کو ستا رہی ہیں
اک دردِ مستقل ہے اشکوں کا سلسلہ ہے
بابا ۔۔۔۔۔

بس میں نہیں ہے میرے اب انتظار کرنا
میرے طرف سے بابا تم اُس کو پیار کرنا
اصغر کا مسکرانا نظروں میں پھر رہا ہے
بابا ۔۔۔۔۔

مولا یہ شعر کب ہے ٹکڑے ہیں یہ جگر کے
یہ نوحہ تیری بیٹی صغریٰ کو یاد کر کے
احمد نے کہہ دیا ہے محسن نے پڑھ دیا ہے
بابا ۔۔۔۔۔


veeraan udaas ghar may sughra ki ye sada hai
tanhiyon may baba dum mera ghut raha hai
baba dum ghut ta hai

rudaad apne gham ki ashkon se likh rahi hoo
tanha mai baithe baithe har dum ye sochti hoo
lene nahi tum aaye kya tumko hogaya hai
baba......

qasim ko dekhlun mai asghar ko dekhlun mai
choti bahan se mil-loon akbar ko dekhlun mai
bemaar hoo mai baba meri yehi dawa hai
baba......

khaali pade hai hujre soonay pade hai bistar
dasta hai mujhko baba ujda hua mera ghar
kya aap ki nazar may meri yehi saza hai
baba......

aajaye aap wapas ya phir mujhe bulaale
furqat may aapki hum ghut ghut ke marna jaaye
wo shidat-e-aalam hai dum lab pe aagaya hai
baba......

pehli si rounaqay wo sab yaad aa rahi hai
bhai behan ki yaadein mujhko sata rahi hai
ek dard-e-mustakhil hai ashkon ka silsila hai
baba......

bas may nahi hai mere ab intezaar karna
mere taraf se baba tum usko pyar karna
asghar ka muskurana nazron may phir raha hai
baba......

moula ye sher kab hai tukde hai ye jigar ke
yeh nowha teri beti sughra ko yaad karke
ahmed ne kehdiya hai mohsin ne pad diya hai
baba......
Noha - Baba Dum Ghut ta Hai
Shayar: Zulfiqar Ahmed
Nohaqan: Mir Mohsin Ali
Download Mp3
Listen Online