اے کربلا میں حق کے سفیروں سلام لو
اے بے کس و یتیموں اسیروں سلام لو

اے حامیان اہل پیمبر تمہیں سلام
اے ناصران بے کس و مضطر تمہیں سلام
اے کربلا کے حمزہ و جعفر تمہیں سلام
اے پاسبان عطرت حیدر تمہیں سلام
اے کربلا میں حق کے

گھر بھر کے لاڈلے علی اکبر تمہیں سلام
اے فاطمہ کے لعل کے دلبر تمہیں سلام
برچھی لگی ہے کیسی جگر پر تمہیں سلام
سونا پڑا ہے اب یہ بھرا گھر تمہیں سلام
اے کربلا میں حق کے

قاسم کی ہائے مرگ جوانی تمہیں سلام
خوں میں بھری حسین کی نشانی تمہیں سلام
اے تین دن کی تشنہ دہانی تمہیں سلام
شہزادے بند ہو گیا پانی تمہیں سلام
اے کربلا میں حق کے

شیروں کی شیر ثانی حیدر تمہیں سلام
کیا تھی مجال روکتا لشکر تمہیں سلام
پانی کو تم نے مار دی ٹھوکر تمہیں سلام
بس لوٹ آئے مشک کو بھر کر تمہیں سلام
اے کربلا میں حق کے

اے فوج شہہ کے ننھے سپاہی تمہیں سلام
کیا خوب تھی تمہاری لڑائی تمہیں سلام
ایسی زباں لبوں پہ پھرائی تمہیں سلام
الٹا کے رکھ دی ساری خدائی تمہیں سلام
اے کربلا میں حق کے

تیروں سے چھلنی جسم معطر تمہیں سلام
باقی نہیں لباس بدن پر تمہیں سلام
پامال لاش سبط پیمبر تمہیں سلام
نیزے پر ورد کرتے ہوئے سر تمہیں سلام
اے کربلا میں حق کے

دکھ ہائے سکینہ تم نے اٹھائے تمہیں سلام
بابا بھی لوٹ کر نہیں آئے تمہیں سلام
رخسار پر طمانچے بھی کھائے تمہیں سلام
نازک سے کان خوں میں نہائے تمہیں سلام
اے کربلا میں حق کے


ay karbala may haq ke safeero salam lo
ay bekaso yateemo aseero salam lo

ay haamiyane aal-e-payambar tumhay salam
ay nasirane bekaso muztar tumhay salam
ay karbala ke hamza-o-jafar tumhay salam
ay pasbane itrate hyder tumhay salam
ay karbala....

ghar bhar ke laadle ali akbar tumhay salam
ay fatima ke laal ke dilbar tumhay salam
barchi kagi hai kaisi jigar par tumhay salam
soona pada hai ab ye bhara ghar tumhay salam
ay karbala....

qasim ki haaye margay jawani tumhay salam
khoon may bhari hassan ki nishani tumhay salam
ay teen din ki tishnadahani tumhay salam
shahzade band hogaya pani tumhay salam
ay karbala....

shero ke sher saaniye hyder tumhay salam
kya thi majaal rokta lashkar tumhay salam
pani ko tumne maardi thokar tumhay salam
bas laut aaye mashq ko bhar kar tumhay salam
ay karbala....

ay fauje sheh ke nanhe sipahi tumhay salam
kya khoob thi tumhari ladaayi tumhay salam
aisi zuban labon pe phirayi tumhay salam
ulta ke rakh-di saari khudayi tumhay salam
ay karbala....

teero se chalni jisme mutahhar tumhay salam
baakhi nahi libaas badan par tumhay salam
pamaal laashay sipte payambar tumhay salam
naize pe vird karte hue sar tumhay salam
ay karbala....

dukh hai sakina tumne uthaye tumhay salam
baba bhi laut kar nahi aaye tumhay salam
ruqsaar par tamachay bhi khaaye tumhay salam
nazuk se kaan khoon may nahaye tumhay salam
ay karbala....
Noha - Ay Karbala May

Nohaqan: Ali Zia Rizvi
Download Mp3
Listen Online