کسی بیمار کے ہونٹوں پہ رہا ایک ہی نام
ہائے اس شام ہائے اس شام ہائے اس شام

جا بہ جا کوچہ بازار میں لوگوں کا ہجوم
جیسے میلے کا سماں جیسے کسی عید کی دھوم
اور زنجیر میں جکڑا ہوا مظلوم امام
ہائے اس شام ہائے اس شام ہائے اس شام

نوک نیزہ پہ ہوا قرآن سنتے ہوئے سر
اپنے چہروں کو وہ بلوں سے چھپاتے ہوئے سر
اور اس حال میں پھر اُم حبیبہ سے کلام
ہائے اس شام ہائے اس شام ہائے اس شام

سات سو کرسی نشینوں سے بھرا وہ دربار
حرم شاہ کے ہمراہ وہ بے کس لاچار
اسی لاغر کے گرجتے ہوئے لہجے کو سلام
ہائے اس شام ہائے اس شام ہائے اس شام

تشت میں فراق شاہ دین پہ وہ حاکم کی چھڑتی
دل و بیمار پہ وہ لمحہ قیامت کی گھڑی
زبط کی آخری حد پر ہے امامت کا قیام
ہائے اس شام ہائے اس شام ہائے اس شام

رات کے پچھلے پہر باپ کو جو روتی تھی
مرگیا شام کے زاندں میں پھر وہ بچی
ایک بھائی پہ گزرتے رہے کیا کیا علم
ہائے اس شام ہائے اس شام ہائے اس شام

بعد عاشور جو روتا رہا چالیس برس
زہرہ ہاشم سے مارا گیا آخر بے کس
آخری وقت بھی شاہد یہی کہتا تھا امام
ہائے اس شام ہائے اس شام ہائے اس شام


kisi bemaar ke hoton pe raha ek hi naam
haaye ash-shaam haaye ash-shaam haaye ash-shaam

jabaja koocha-o-bazaar may logon ka hujoom
jaise melay ka sama jaise kisi eid ki dhoom
aur zanjeer may jakda hua mazlom imam
haaye ash-shaam....

nok-e-naiza pa wo quran sunatay huye sar
apne chehro ko wo balon se chupatay huye sar
aur is haal may phir umme habiba se kalam
haaye ash-shaam....

saat-so kursi nasheeno se bhara wo darbar
haram-e-shah ke hamrah wo bekas lachaar
usi laghar ke garajtay huye lehjay ko salaam
haaye ash-shaam....

tasht may farq-e-shahe deen pa wo hakim ki chadi
dil-e-bemaar pa wo lamha qayamat ki ghadi
zabt ki aakhri had paar hai imamat ka qayaam
haaye ash-shaam....

sab aseero ke liye ek andhera zindan
is andheray may tadap kar kisi bachi ka fughan
kis ko neend aayegi aise may kahan ka aaraam
haaye ash-shaam....

raat ke pichlay peher baap ko jo roti thi
margayi shaam ke zindan may phir wo bachi
ek bhai pe guzartay rahay kya kya aalaam
haaye ash-shaam....

baad-e-aashur jo rota raha chalees baras
zehr-e-hashaam say mara gaya aakhir bekas
aakhri waqt bhi shahid yehi kehta tha imam
haaye ash-shaam....
Noha - As Shaam
Shayar: Shahid Jafer
Nohaqan: Ali (Anjuman Hyderi Ali Basti)
Download mp3
Listen Online