آخری اذان تو سُن لی ، اماں اچھی میری اماں
سینے سے لگا لو مرنے کی رضا دو، اماں اچھی میری اماں

اے اماں پھُوپھی جان کے دو لال سدھارے، دریا کے کنارے
تم اپنے جوان لال کو شبیر پہ وارو، اماں اچھی میری اماں
سینے سے لگا لو ۔۔۔۔۔

سہرا تیرے بیٹے کا مقدر میں نہیں تھا، اب وقت یہ آیا
پوشاکِ شہانی کو کفن میرا بنا لو، اماں اچھی میری اماں
سینے سے لگا لو ۔۔۔۔۔

وہ دیکھو سُوئے دشتِ بلا مادرِ مضطر، گھیرے ہیں ستمگار
کیا باپ کی نصرت نہ کروں مجھ کو بتا دو،اماں اچھی میری اماں
سینے سے لگا لو ۔۔۔۔۔

مانا کے نہیں بیٹے کی فرقت کوئی آساں، پر کیا کروں اماں
یہ صبر کی منزل ہے ذرا دل کو سنبھالو،اماں اچھی میری اماں
سینے سے لگا لو ۔۔۔۔۔

کچھ دیر میں یہ لال بھی کہلائے گا لاشہ، ہے اک تمنّا
بیمارِ مدینہ کو مدینے سے بُلا لو،اماں اچھی میری اماں
سینے سے لگا لو ۔۔۔۔۔

کیا تم کو گوارا ہے کہ زندہ رہے بیٹا، اور قتل ہو بابا
میں اس لیے کہتا ہوں نہ جینے کی سزا دو، اماں اچھی میری اماں
سینے سے لگا لو ۔۔۔۔۔

تڑپو گی شب و روز میری یاد میں ہر دم، کرتے ہوئے ماتم
اک بار مجھے اپنے کلیجے سے لگا لو، اماں اچھی میری اماں
سینے سے لگا لو ۔۔۔۔۔

جو مظہر و عرفان کے ہونٹوں کی بُقا ہے، اکبر کی صدا ہے
جو کہتے تھے اماں مجھے مرنے کی رضا دو، اماں اچھی میری اماں
سینے سے لگا لو ۔۔۔۔۔


aakhri azan to sunli, amma achi meri amma
seene se lagalo marne ki riza do, amma achi meri amma

ay amma phuphi jaan ke do laal sidhaare, darya ka kanare
tum apne jawan laal ko shabbir pe waaro, amma achi meri amma
seene se lagalo....

sehra tere bete ke muqaddar may nahi tha, ab waqt ye aaya
poshak-e-shahani ko kafan mera banalo, amma achi meri amma
seene se lagalo....

wo dekho suye dashte bala maadar-e-muztar, ghayre hai sitamgar
kya baap ki nusrat na karoo mujko bata do, amma achi meri amma
seene se lagalo....

maana ke nahi bete ki furqat koi aasan, par kya karoo amma
ye sabr ki manzil hai zara dil ko sambhalo, amma achi meri amma
seene se lagalo....

kuch dayr may ye laal bhi kehlayega laasha, hai ek tamanna
bemaar-e-madina ko madine se bula lo, amma achi meri amma
seene se lagalo....

kya tumko gawara hai ke zinda rahe beta, aur qatl ho baba
mai is liye kehta hoo na jeene ki saza do, amma achi meri amma
seene se lagalo....

tadpogi shab-o-roz meri yaad may har dam, kerte huve matam
ek baar mujhe apne kaleje se laga lo, amma achi meri amma
seene se lagalo....

jo mazhar-o-irfan ke honton ke buka hai, akbar ki sada hai
jo kehte thay amma mujhe marne ki riza do, amma achi meri amma
seene se lagalo....
Noha - Amma Achi Meri Amma
Shayar: Mazhar Abidi
Nohaqan: Irfan Haider
Download Mp3
Listen Online