الوداع اے ناصرِ دینِ پیعمبر الوداع الوداع الوداع
الوداع اے کربلا کے میرِ لشکر الوداع الوداع الوداع

اے عزاداروں کے مہماں اے عزاخانوں کی جاں
حقِ ماتم ہم ادا کر پائے اے مولا کہاں
تجھ سے شرمندہ ہیں اے دلبندِ خاتونِ جناں
روحِ کعبہ وارثِ محراب و ممبر الوداع
الوداع الوداع
الوداع اے ناصرِ دین ۔۔۔۔۔

ہے تمہارے خون سے رنگیں داستانِ کربلا
تم نثارِ دلبرِ زہرا ہوئے صد مرحبا
تم کو رُخصت کر رہے ہیں ہم بصد آہ و بُقا
الوداع اے قاسم و عباس و اکبر الوداع
الوداع الوداع
الوداع اے ناصرِ دین ۔۔۔۔۔

تیری قربانی کا ہو کیا ذکر اے غنچہ نیسا
ٍتیرے خون نے روحِ دینِ حق کو بخشا ہے جلال
کمسنی میں تیر کھایا اس کا صدمہ ہے کمال
الوداع اے تشنہ لب معصوم اصغر الوداع
الوداع الوداع
الوداع اے ناصرِ دین ۔۔۔۔۔

اے رفیقانِ شاہِ دین آفریں صد آفریں
سر بلندی کا تمہاری کچھ تہیُم ہی نہیں
نقدِ زادِ کار خریدی تم نے پھر باتیں بڑی
ناصرانِ گانِ زہرا کو پیعمبر الوداع
الوداع الوداع
الوداع اے ناصرِ دین ۔۔۔۔۔

بس تہہِ طوق و سلاسل اے میرے بیمار امام
تیری ہمت تیری عزت مالک وسدا سلام
صبر کی تاریخ میں ہے منفرد تیرا مقام
اے حفیظِ حُرمتِ دینِ پیعمبر الوداع
الوداع الوداع
الوداع اے ناصرِ دین ۔۔۔۔۔

عہد ہے تجھ سے ہمارا بانیئے رسمِ ادا
ہم تیرے بھائی کے غم کو تازہ رکھیں گے سدا
سلسلہ قائم رہے گا ماتمِ شبیر کا
زینبِ مظلوم اے سرور کی خواہر الوداع
الوداع الوداع
الوداع اے ناصرِ دین ۔۔۔۔۔

اے امامِ انس و جاں اے بادشاہِ مشرقین
اے دلِ زہرا کی ٹھنڈک اے نبی کے نورِعین
مضطرب ہے قلبِ عابد تیری فرقت میں حسین
غمزدوں کے مونث و غمخوار ویاور الوداع
الوداع الوداع
الوداع اے ناصرِ دین ۔۔۔۔۔


alwida ay nasire deen e payambar alwida
alwida alwida
alwida ay karbala ke meer e lashkar alwida
alwida alwida

ay azadaron ke mehman ay azakhano ki jaan
haqqe matam hum ada kar paye ay maula kahan
tujhse sharminda hai ay dilbande khatoone jina
roohe kaaba waarise mehrab o mimbar alwida
alwida alwida
alwida ay nasire deen....

hai tumhare khoon se rangeen daastane karbala
tum nisare dilbare zehra hue sad marhaba
tumko ruqsat kar rahe hai hum basad aaho buka
alwida ay qasim o abbas o akbar alwida
alwida alwida
alwida ay nasire deen....

teri qurbani ka ho kya zikr ay ghunchanesa
tere khoon ne roohe deen e haq ko baksha hai jalaal
kamsini may teer khaya iska sadma hai kamaal
alwida ay tashnalab masoom asghar alwida
alwida alwida
alwida ay nasire deen....

ay rafeeqane shahe deen aafreen sad aafreen
sar balandi ka tumhari kuch tahayyum hi nahi
nakhde zaade kar khareedi tumne phir baatein badi
nasirane-gane zehra ko payambar alwida
alwida alwida
alwida ay nasire deen....

bas tahe tauq o salasil ay mere bemaar imam
teri himmat tere izzat maaliko sadha salam
sabr ki tareekh may hai munfarid tera maqam
ay hafeeze hurmate deen e payambar alwida
alwida alwida
alwida ay nasire deen....

ehd hai tujhse hamara baniye rasme ada
hum tere bhai ke gham ko taaza rakhenge sada
silsila qayam rahega matame shabbir ka
zainab e mazloom ay sarwar ki khwahar alwida
alwida alwida
alwida ay nasire deen....

ay imame ins o jaan ay baadshahe mashraqain
ay dile zehra ki thandak ay nabi ke noore ain
muztarib hai qalbe abid teri furqat may hussain
ghamzadon ke monis o ghamkhwar o yawar alwida
alwida alwida
alwida ay nasire deen....
Noha - Alwida Ay Nasire Deen

Nohaqan: Ghulamane Hussain
Download Mp3
Listen Online