علی کا مرتبہ اللہ اکبر
ابو طالب کا بیٹا نام حیدر
لقب قرار اور صادقِ اکبر
اسداللہ،کرار و صفدر
قیامت تک نہ ہو گا جن کا ہمسر
خُدا نے تیغ دی احمد نے دُختر

ولادت خانہ کعبہ میں پائی
اجل بھی آئی تو مسجد میں آئی
فرشتوں کی طرح حاجت روائی
خُدا نے دی جسے مُشکل کشائی
کرے مُردے کو زندہ جس کی ٹھوکر
علی کا مرتبہ ۔۔۔۔۔

ملی جس کو ولایت اور امامت
وہ جس کی زوجہ ہو خاتونِ جنت
ملی شبیر و شبر جیسی نعمت
ہے اک چُٹکی میں دنیا بھر کی دولت
رہا جو زینتِ محراب و ممبر
علی کا مرتبہ ۔۔۔۔۔


فضیلت آپ کی کس سے بیاں ہو
جو مصروفِ رقم سارا جہاں ہو
ورق چاہے زمین و آسماں ہو
رقم پھر بھی نہ اُن کی داستاں ہو
اگر ہو روشنائی یہ سمندر
علی کا مرتبہ ۔۔۔۔۔

علی گیارہ اماموں کے پِدر ہیں
نبی ہیں شہر تو یہ ان کا در ہیں
پیعمبر کے لیئے سینہ سپر ہیں
شبِ معراج حق کے ہمسفر ہیں
علی اور احمدِ مُرسل کا بستر
علی کا مرتبہ ۔۔۔۔۔

نہیں بنتِ اسد سی کوئی عورت
ملی جس کو خُدا سے یہ فضیلت
پلی آغوش میں جس کی امامت
خُدا کا گھر بنا جائے ولادت
ہوا جس کے لیئے دیوار میں در
علی کا مرتبہ ۔۔۔۔۔

نہ غُصے سے شکن آئی جبیں تک
نہ اُلٹی جنگ میں بھی آستیں تک
لرز جاتے تھے جبرائیل اٰمیں تک
علی کا نام ہے فتح مبیں تک
لکھی دستِ علی پتھر پر نیزہ
علی کا مرتبہ ۔۔۔۔۔

مدد کو آ گئے جس نے پُکارا
دیا دُشمن کو بھی اپنے سہارا
دیا طوفان میں کشتی کو کنارا
چمک اُٹھا مقدر کا ستارا
علی مُشکل کشائ ساقیِ کوثر
علی کا مرتبہ ۔۔۔۔۔


کرو ہر سال ماتم مرتضٰی کا
منائو غم علی مُشکل کشائ کا
یہ ہے تابوت شیرِ کبریائ کا
کہ گھر اُجڑا محمدِ مصطفٰی کا
کہ ہیں نالہ کناں شبیر و شبر
علی کا مرتبہ ۔۔۔۔۔

خُدا کا یہ کرم کیا مجھ پہ کم ہے
علی کا ذکر اور میرا قلم ہے
یہ سب تقدیر کی نظرِ کرم ہے
علی کا نام کتنا محترم ہے
کہے کنوا اُٹھاکے صحت و محشر
علی کا مرتبہ ۔۔۔۔۔


ali ka martaba allahu akbar
abu talib ka beta naam hyder
laqab karrar aur siddiqe akbar
asadullah karrar o safdar
qayamt tak na hoga jinka humsar
khuda ne taygh di ahmed ne dukhtar

wiladat khana e kaaba hai paayi
ajal bhi aayi to masjid may aayi
farishto ki tarhe haajat rawayi
khuda ne di jise mushkil kushai
kare murde ko zinda jiski thokar
ali ka martaba....

mili jisko wilayat aur imamat
wo jiski zauja ho khatoone jannat
mili shabbir o shabbar jaisi naymat
hai ek chutki may dunya bhar ki daulat
raha jo zeenat e mehrab o mimbar
ali ka martaba....

fazeelat aap ki kis se bayan ho
jo masroofe rakam saara jahan ho  
waraq chahe zameen o paasban ho  
rakam phir bhi na inki daastan ho  
agar ho rasuhanyi ye samandar
ali ka martaba....

ali gyara imamo ke pidar hai
nabi hai shehr to ye inka dar hai
payambar ke liye seena sipar hai
shabe meraaj haq ke humsafar hai
ali aur ahmed e mursal ka bistar
ali ka martaba....

nahi binte asad si koi aurat
mili jisko khuda se ye fazeelat
pali aagosh may jiski imamat
khuda ka ghar bana jaaye wiladat
hua jiske liye dewaar may dar
ali ka martaba....

na ghusse se shikan aayi jabeen tak
na ulti jang may bhi aasteen tak
laraz jaate thay jibraeel ameen tak
ali ka naam hai fathe mubeen tak
likhi daste ali pathar par naiza  
ali ka martaba....

madad ko aagaye jisne pukara
diya dushman ko bhi apne sahara
diya toofan may kashti ko kanara
chamak utha muqaddar ka sitara
ali mushkil kusha saaqiye kausar
ali ka martaba....

karo har saal matam murtuza ka
manao gham ali mushkil kusha ka
ye hai taboot sher e kibriya ka
ke ghar ujda mohamed mustufa ka
ke hai naala kuna shabbir o shabbar
ali ka martaba....

khuda ka ye karam kya mujhpe kam hai
ali ka zikr aur mera qalam hai
ye sab taqdeer ki nazre karam hai
ali ka naam kitna mohtaram hai
kahe kunwa uthake sehto mehshar  
ali ka martaba....
Noha - Ali Ka Martaba
Shayar: Mehshar Lakhnavi
Nohaqan: Tableeq e Imamia (Nazim Hussain)
Download Mp3
Listen Online