علی اکبر علی اصغر
صدائیں دے رہی ہے ٹھوکریں کھاتی ہے ماںدردر
علی اکبر ۔۔۔

کہاں سوتے ہو کیوں دیتے نہیں آواز اُٹھ اُٹھ کر
علی اکبر ۔۔۔

صدائوں پر صدائیں دے رہا ہے باپ ھٰل مِن کی
مصیبت کی گھڑی ہے چین سے سوتے ہو تم دلبر
علی اکبر ۔۔۔

ضعیفی میں پدر یوں ٹھوکریں کھاتا ہے در در کی
کوئی ایسا نہیں دے دے سہارا جو ذرا بڑھ کر
علی اکبر ۔۔۔

فرس سے خاک پر گرنے کو ہے جان و دلِ زہرا
ہزاروں زخم ہیں اور اک جسم سبطِ پیغمبر
علی اکبر ۔۔۔

کسے آواز دوں کس کو پُکاروں مصیبت میں
گُلِ شہ ِدین پر چل رہا ہے شمر کا خنجر
علی اکبر ۔۔۔

مدد کے واسطے کس کو پُکاروں آہ خیمے میں
لگی ہے آگ اور غش میں پڑے ہیں عابدِ مُضطر
علی اکبر ۔۔۔

گلے میں طوق بیڑی پائو ں میں ہاتھوں میں ہتھکڑیاں
چلا جاتا ہے میرِے کارواں پہنے ہوئے لنگر
علی اکبر ۔۔۔

کہاں پر سو رہے ہو غیرتِ آلِ بنی ہاشم
سرِ بازارِ کوفہ ہوں میرے سر پر نہیں چادر
علی اکبر۔۔۔

پُھوپھی اماں چُھپائے چہرئہ عصمت کو بالوں سے
کُھلے سر جا رہی ہے شام کے دربار میں دلبر
علی اکبر ۔۔۔


ali akbar ali asghar
sadaye de rahi hai thokare khati hai maa dar dar
ali akbar....

kahan sotay ho kyon dete nahi awaaz uth uth kar
ali akbar....

sadao par sadayein de raha hai baap hal min ki
musibati ki ghadi hai chain se sotay ho tum dilbar
ali akbar....

zaeefi may pidar yun thokarein khata hai dar dar ki
koi aisa nahi de de sahara jo zara badh kar
ali akbar....

faras se khaak par girne ko hai jaan-o-dile zehra
hazaro zakhm hai aur ek jisme sibte payghambar
ali akbar....

kise awaaz doo kisko pukarun is musibat may
guluye shahe deen par chal raha hai shimr ka khanjar
ali akbar....

madam ke waaste kisko pukaroon aah qaime may
lagi hai aag aur ghash may paday ha abide muztar
ali akbar....

galaya may tauq bedi paon may haaton may hadkadiya
chala jaata hai dheerey kaarwan pehne hue langar
ali akbar....

kahan par so rahe ho ghairate aale bani hashim
sare bazaare kufa hoo mere sar par nahi chadar
ali akbar....

phuphi amma chupaye chahraye ismat ko balon se
khule sar jaa rahi hai shaam ke darbar may dilbar
ali akbar....
Noha - Ali Akbar Ali Asghar

Nohaqan: Sachey Bhai
Download Mp3
Listen Online