عباس کے پرچم کو ہوا چوم رہی ہے
لگتا ہے کے زہرا کی دعا چوم رہی ہے
عباس کے پرچم ۔۔۔۔۔

آ دیکھ سُکینہ تیرے عباس کا لاشہ
دریا کے کنارے پہ قضا چوم رہی ہے
عباس کے پرچم ۔۔۔۔۔

یوں بہیگتی جاتی ہے فضا چوم کے علم کو
جیسے کے یہ زینب کی ردا چوم رہی ہے
عباس کے پرچم ۔۔۔۔۔

سر اپنا پٹختا ہے کناروں سے یہ پانی
جا عرش کو ماتم کی صدا چوم رہی ہے
لگتا ہے کے زہرا کی ۔۔۔۔۔

بہتا ہوا پانی ہے کے عباس کے آ نسوں
مشکیزے کو اُمت کی جفا چوم رہی ہے
لگتا ہے کے زہرا کی ۔۔۔۔۔

سر چو کے غازی کا ابنِ علی نے
عباس قدم تیرے وفا چوم رہی ہے
لگتا ہے کے زہرا کی ۔۔۔۔۔

جواد یہ نوحہ ہے شہنشاہِ وفا کا
ہر لفظ کو اشکوں کی گھٹا چوم رہی ہے
لگتا ہے کے زہرا کی ۔۔۔۔۔


abbas ke parcham ko hawa choom rahi hai
lagta hai ke zehra ki duwa choom rahi hai
abbas ke parcham ….

aa dekh sukayna tere abbas ka laasha
darya ke kinare pe kaza choom rahi hai
lagta hai ke zehra ki ....

yun bheegti jaati hai khaza choom ke alam ko
jaise ke ye zainab ki rida choom rahi hai
lagta hai ke zehra ki ....

sar apna patakta hai kinaro pe ye paani
ja arsh ko matam ki sada choom rahi hai
lagta hai ke zehra ki ....

behta huwa paani hai ke abbas ke aansu
mashkize ko ummat ki jafa choom rahi hai
lagta hai ke zehra ki ....

sar choom ke ghazi ka kaha ibne ali ne
abbas qadam tere wafa choom rahi hai
lagta hai ke zehra ki ....

jawad ye nauha hai shehen-shaahe wafa ka
har lafz ko ashkon ki ghata choom rahi hai
lagta hai ke zehra ki ....
Noha - Abbas Ke Parcham Ko
Shayar: Jawad
Nohaqan: Hasan Sadiq
Download Mp3
Listen Online