آتی ہے گردوں سے یہ پہیم صدا
قتل ہوئے سجدے میں شیر خدا
خانہ حق میں یہ غضب ہو گیا
قتل ہوئے سجدے میں شیر خدا

غم سے ہے زینب نڈھال کھول دئیے سر کے بال
کہتی ہے یہ پر ملال دیکھو تو بابا کا حال
دیتے ہیں جبریل یہ کیسی ندا
قتل ہوئے سجدے میں شیر خدا
آتی ہے گردوں سے

ساتھ پڑے جلوہ گر کہتی ہے سر پیٹ کر
پھٹتا ہے میرا جگر کوئی تو لائے خبر
گھر میں خدا کے یہ ستم کیا ہوا
قتل ہوئے سجدے میں شیر خدا
آتی ہے گردوں سے

دیکھو تو حسنین جائو بابا کو گھر میں تو لائو
ایسا لگا سر پہ گھائو مجھ کو خدارا بتائو
پوچھو تو جراح سے ہو گی شفا
قتل ہوئے سجدے میں شیر خدا
آتی ہے گردوں سے

تشنہ غم دل پہ کھائے دوڑ کر حسنین آئے
دیکھا عجب حال ہائے خوں میں ہیں بابا بتائے
فرش سے تا عرش ہے محشر بپا
قتل ہوئے سجدے میں شیر خدا
آتی ہے گردوں سے

ہائے قیامت ہوئی تیغ ستم کی چلی
مارا علی ولی گریہ روح بنی
کیسی لعین نے یہ کی جور و جفا
قتل ہوئے سجدے میں شیر خدا
آتی ہے گردوں سے

اے میرے زخمی امام تم پہ درود و سلام
خوب کی تبلیغ عام دے دیا قاتل کو جام
ہو گا انیس ایسا کوئی پیشوا
قتل ہوئے سجدے میں شیر خدا
آتی ہے گردوں سے


aati hai gardoon se ye payham sada
qatl hue sajde may shere khuda
qaanae haq may ye ghazab ho gaya
qatl hue sajde may shere khuda

gham se hai zainab nidhaal, khol diye sar ke baal
kehti hai ye pur malaal, dekho to baba kahan
dete hai gibreel ye kaisi nida
qatl hue sajde may shere khuda
aati hai gardoon...

saath pade jalwagar, kehti hai sar peet kar
phat-ta hai mera jigar, koi to laaye khabar
ghar may khuda ke ye sitam kya hua
qatl hue sajde may shere khuda
aati hai gardoon...

dekho to hasnain ja, baba ko ghar may to lao
aisa laga sar pe ghao, mujko khudara batao
poocho to jarraah se hogi shifa
qatl hue sajde may shere khuda
aati hai gardoon...

nashtare gham dil pa khaye, daud kar hasnain aaye
dekha ajab haal hai, khoon may hai baba nahaye
firsh se ta arsh hai mehshar bapa
qatl hue sajde may shere khuda
aati hai gardoon...

haaye qayamat hui, taygh sitam ki chali
baara ali-e-wali, girya-e-roohe nabi
kaisi layeen ne ye ki joro-jafa
qatl hue sajde may shere khuda
aati hai gardoon...

ay mere zakhmi imam, tum pa durood-o-salaam
dhoop ke tabli may aap, dediya khaatil ko jaan
hoga anees aisi koi peyshwa
qatl hue sajde may shere khuda
aati hai gardoon...
Noha - Aati Hai Gardoon Se
Shayar: Anees Pehersari
Nohaqan: Ali Zia Rizvi
Download mp3
Listen Online