آج کُوفے میں شبیر و شبر رو رہے ہیں
باپ کو اپنے زہرا کے دلبر رو رہے ہیں

بحر وبر میں ہے غُل آج برپا وا علی کا
آج جبرئیل عرشِ بری پر رو رہے ہیں
آج کُوفے میں ۔۔۔۔۔

آج شہزادیاں ہیں پریشاں شاہِ ذیشاں
اُٹھ کے تسکین دو بحرِ داور رو رہے ہیں
آج کُوفے میں ۔۔۔۔۔

چھوڑ کر ہم کو بابا سدھارے
بیٹیاں فاطمہ کی یہ کہہ کر رو رہے ہیں
آج کُوفے میں ۔۔۔۔۔

ہے یتیموں کے بے وائوں کے والی شاہِ عالی
اب نہ وارث رہا کوئی سر پر رو رہے ہیں
آج کُوفے میں ۔۔۔۔۔

ہے جنازے پہ اک شور برپا بے کسوں کا
باپ سے لپٹے شبیر و شبر رو رہے ہیں
آج کُوفے میں ۔۔۔۔۔

خاک اُڑاتے ہیں سر پر نواسے مصطفیٰ کے
گھر سے جاتا ہے تابوتِ حیدر رو رہے ہیں
آج کُوفے میں ۔۔۔۔۔

اے حمایت عزادارِ حیدر پیٹ کر سر
آج اس طرح نوحے کو سُن کر رو رہے ہیں
آج کُوفے میں ۔۔۔۔۔


aaj koofe may shabbir-o-shabbar ro rahe hai
baap ko apne zehra ke dilbar ro rahe hai

behrobar may hai ghul aaj barpa wa ali ka
aaj jibraeel arshe bari par ro rahe hai
aaj koofe may....

aaj shehzadiyan hai pareshan shahe zeeshan
uthke taskeen do behre daawar ro rahe hai
aaj koofe may....

chor kar humko baba sidhare be-sahare
betiyan fathima ki ye keh kar ro rahe hai
aaj koofe may....

hai yateemo ke bewaon ke waali shahe aali
ab na waaris raha koi sar par ro rahe hai
aaj koofe may....

hai janaze pe ek shor barpa bekaso ka
baap se lipte shabbir-o-shabbar ro rahe hai
aaj koofe may....

khaak udate hai sar par nawase mustufa ke
ghar se jaata hai taboote hyder ro rahe hai
aaj koofe may....

ay himayat azadare hyder peet kar sar
aaj is tarhe nohay ko sunkar ro rahe hai
aaj koofe may....
Noha - Aaj Koofe May
Shayar: Himayat
Nohaqan: Mirza Sikander Ali
Download Mp3
Listen Online